منشیات فروشی روکنے کا ذمہ دار اعلیٰ پولیس عہدیدار خود منشیات فروش نکلا

لاہور : پولیس کا اینٹی منشیات سمگلنگ یونٹ منشیات فروشی میں ملوث نکلا۔ ڈی ایس پی مظہر اقبال پر ٹیم سمیت منشیات فروشی کا الزام ہے، ملزم ڈی ایس پی گرفتاری کے لئے چھاپے کے دوران فرار ہو گیا, سب انسپکٹر محمود ،اے ایس آئی کاشف اور ہیڈ کانسٹیبل شکیل سمیت 4 پولیس ملازمین کو حراست میں لے لیا گیا۔ ڈی ایس پی مظہر اقبال اور اس کی قیادت میں کام کرنے والےاینٹی منشیات سمگلنگ یونٹ پر 8 کروڑ کی منشیات فروخت کرنے کا انکشاف ہوا ہے۔
پولیس حکام نے بتایا ہے کہ وہ ڈی ایس پی کی گرفتاری کے لئے چھاپے جاری ہیں،جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔ پولیس حکام کے مطابق حراست میں لئے گئے پولیس افسران اور اہلکاروں سے تحقیقات جاری ہیں۔ جلد مقدمہ درج کر لیا جائے گا۔
پولیس حکام کے مطابق ڈی ایس پی مظہر اقبال پر منشیات فروشوں کی گاڑی غبن کرنے کا بھی الزام ہے۔ کروڑوں روپے مالیت کی اس گاڑی سے منشیات برآمد ہوئی تھی اور اسے منشیات کے ساتھ اپنی تحویل میں لیا گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں