ترک صدر رواں ماہ پیوٹن کے دورہ ترکیہ کیلئے پرامید

انقرہ : ترک صدر رجب طیب اردگان کا کہنا ہے کہ وہ اگست میں روس کے صدر پیوٹن کے ترکیہ کے دورے کے لیے پر امید ہیں۔
ترک میڈیا کے مطابق ترک صدر رجب طیب اردگان کا کہنا تھا کہ ولادی میر پیوٹن کے مجوزہ دورہ ترکیہ کے لیے کوئی تاریخ طے نہیں کی گئی ہے لیکن امید ہے کہ وہ رواں ماہ یہ دورہ کرنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔
رپورٹس کے مطابق ترک صدر بحیرہ اسود کے اناج کے معاہدے کو دوبارہ شروع کرنے پر زور دے رہے ہیں اور امکان ہے کہ روسی صدر کے دورے کے دوران یہ معاملہ ایجنڈے میں سرفہرست رہے گا۔
یاد رہے خوراک کی عالمی قیمتوں پر 24 فروری 2022 کو شروع ہونے والی روس یوکرین جنگ کے اثرات کو کم کرنے کے لیے اقوام متحدہ ، روس، ترکیہ اور یوکرین نے 22 جولائی 2022 کو استنبول میں بحیرہ اسود کے اناج راہداری کے معاہدے پر ایک تقریب میں دستخط کیے تھے۔
17 جولائی کو روسی صدارتی محل کریملن کے ترجمان دمتری پیسکوف نے ایک بیان میں اس معاہدے کی معیاد ختم ہونے کا اعلان کیا تھا۔
انہوں نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ اناج راہداری کا معاہدہ درحقیقت اپنے اختتام کو پہنچ چکا ہے، اس معاہدے پر روس کی توقعات پوری نہیں کی گئی ہیں، اگر روسی شرائط پر عمل درآمد کیا جاتا ہے تو روس فوری طور پر معاہدے پر واپس آجائے گا۔
اردگان نے استنبول میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ روسی صدر کے دورہ ترکیہ کی تاریخ واضح نہیں ہے لیکن وزیر خارجہ اور انٹیلی جنس ادارے کے سربراہ اس معاملے پر بات چیت کر رہے ہیں اور مجھے امید ہے کہ یہ دورہ رواں ماہ اگست میں ہوگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ ترکیہ افریقی ممالک کے ساتھ اپنے مثبت تعلقات کو برقرار رکھنے کے لیے کام کر رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں