اقوام متحدہ نے ترکیہ کیلئے ایک ارب ڈالر امداد کی اپیل کردی

نیویارک : اقوام متحدہ نے ترکیہ کے زلزلہ متاثرین کی امداد کیلئے ایک ارب ڈالر کی اپیل جاری کردی ہے ۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ ایک ارب ڈالر سے ترکیہ کے 52 لاکھ افراد کو تین ماہ کیلئے انسانی امداد کی فراہمی ممکن ہوسکے گی۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس کا کہنا تھا کہ ضرورتیں بہت زیادہ ہیں اور لوگ تکلیف میں ہیں مزید وقت ضائع نہیں کیا جا سکتا، میں عالمی برادری سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ آگے بڑھے اور اس دور کی سب سے بڑی قدرتی آفات میں سے ایک کیلئے فنڈ فراہم کرے۔

اقوام متحدہ شام کے زلزلہ متاثرین کے لیے بھی تقریباً 40 کروڑ ڈالر امداد کی اپیل کر چکا ہے ۔

دوسری جانب زلزلہ متاثرہ علاقوں میں ہزاروں امدادی کارکن سرد موسم کے باوجود ملبے میں زندگی کے آثار تلاش کررہے ہیں اور وقت گزرنے کے ساتھ ملبے میں زندہ بچ جانے والوں کے حوالے سے اُمیدیں دم توڑ رہی ہیں۔

اس سے قبل اقوام متحدہ کی امدادی ایجنسی کے سربراہ مارٹن گریفتھ نے خدشہ ظاہر کیا تھا کہ ترکیہ اور شام میں زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد 50 ہزار سے بڑھ سکتی ہیں ۔

یہ بھی پڑھیں :ترکیہ اور شام میں زلزلہ، ہلاکتیں 50ہزار سے بڑھنے کا خدشہ ہے : اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کا کہنا تھا کہ ترکیہ اور شام میں کم از کم 870,000 افراد کو فوری طور پر کھانے کی ضرورت ہے جبکہ صرف شام میں 5.3 ملین تک لوگ بے گھر ہو سکتے ہیں۔

ترکیہ اور شام میں 6 فروری کو آنیوالے 7 اعشاریہ 8 شدت کے زلزلے سے اموات کی مجموعی تعداد 42 ہزار تک پہنچ چکی ہے ، زلزلے کے نتیجے میں ترکیہ اور شام میں بڑے پیمانے پر جانی ومالی نقصان ہوا ہے جبکہ امدادی سرگرمیاں جاری ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں